وارانسی : الہ آباد ہائی کورٹ نے بڑے پیمانے پر عدالتی افسران کے تبادلے کیے ہیں۔ ہائی کورٹ نے سینئر ڈویژن کے 121 سول ججوں کے تبادلے بھی کر دیے ہیں۔ اس میں جج روی کمار دیواکر کا نام بھی شامل ہے، جنہوں نے وارانسی گیانواپی کمپلیکس کے سروے کا حکم دیا تھا۔ گزشتہ ماہ ہی مختلف ضلعی عدالتوں میں کام کرنے والے ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن ججز اور فیملی کورٹ کے ججوں کا تبادلہ کیا گیا تھا۔ اب ریاست کے مختلف اضلاع میں تعینات کل 619 عدالتی افسران کا ایک ضلع سے دوسرے ضلع میں تبادلہ کیا گیا ہے۔
وارانسی کی کاشی گیانواپی مسجد کے سروے کا حکم دینے والے سول جج روی دیواکر کا بریلی تبادلہ کر دیا گیا ہے۔ اب وہ بریلی میں سول (سینئر ڈویژن) کا چارج سنبھالیں گے۔ وارانسی کے سول جج روی کمار دیواکر نے اس سے قبل گیانواپی متنازع کمپلیکس کے کمیشن کے سروے کا حکم دیا تھا۔ ساتھ ہی اسے اس کیس کی سماعت کے دوران اور بعد میں جان سے مارنے کی دھمکیاں بھی ملی تھیں۔ روی کمار دیواکر اصل میں لکھنؤ کے رہنے والے ہیں۔ وہ تقریباً 2 سال قبل وارانسی میں سول جج کے طور پر شامل ہوئے تھے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here