سپریم کورٹ کے مقرر کردہ وکیل سنجے ہیگڑے اور سادھنا رام چندرن بدھ کو شاہین باغ جا سکتے ہیں ۔ اس سے قبل پیر کو دہلی پولیس کے اعلی افسران نے سنجے ہیگڑے سے ملاقات کی تھی۔

نئی دہلی : سپریم کورٹ نے شاہین باغ کے مظاہرین سے بات کرنے کے لئے دو لوگوں  کو ذمہ داری دی ہے۔ عدالت نے یہ بھی کہا کہ اگر بات چیت  سے راستہ نہیں کھولا گیا تو کارروائی کرنے کی  کھلی چھوٹ دی جاسکتی ہے۔ سپریم کورٹ کے مقرر کردہ مذاکراہ کار سنجے ہیگڑے اور سادھنا رام چندرن بدھ کو شاہین باغ جاسکتے ہیں۔ اس سے قبل پیر کو دہلی پولیس کے اعلی افسران نے سنجے ہیگڑے سے ملاقات کی تھی۔

سینئر وکیل سنجے ہیگڑے نے کہا کہ سادھنا رام چندرن منگل کو دہلی میں نہیں ہوں گے۔ لہذا باضابطہ مذاکراہ شروع نہیں ہوں گے۔ ہیگڑے نے کہا کہ اگر یہ زیادہ ضروری بھی ہے تو ، وہ منگل کے روز غیر رسمی طور پر شاہین باغ کے دھرنے میں جائیں گے۔ اس کے بعد مظاہرین سے غیر رسمی گفتگو ہوگی۔ بدھ کے روز ، سب کی موجودگی میں باضابطہ بات چیت  ہو گے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here