میرٹھ : ایک روز قبل یوپی کے میرٹھ میں ایک شخص  کورونا پو زیٹیو آیا تھا ،وہ لاک ڈاؤن میں بھی بریانی بیچتا رہا۔ ایک ہفتہ قبل صحت کی خرابی کی وجہ سے اس نے بریانی بیچنی  بند کردی۔ خدشہ ہے کہ انفکشن ہونے کے باوجود ، اس نے کئی دنوں سے بریانی بیچ ڈالی ہوگی۔ اس کے ٹھیلے   پر روزانہ بریانی کھانے والے سیکڑوں لوگوں میں خوف و ہراس کی صورتحال ہے۔ کچوری سبزی کا ایک ٹھیلہ بھی   اس کے  برابر میں تھا ۔ اس کے کسٹمر  بھی گھبراہٹ میں ہیں۔ دوسری طرف ، محکمہ صحت نے اس کے ساتھ رابطے میں آنے والے 32 افراد کو کوارنٹیں  کر دیا ہے۔

جمعرات کی رات برہماپوری علاقے کے بھومیا پل کے رہائشی ایک شخص کی کورونا رپورٹ مثبت آئی۔ وہ میرٹھ میڈیکل اسپتال کے آئسولیشن  وارڈ میں زیر علاج ہے۔ جب محکمہ صحت نے اس کے بارے میں جانکاری  اکٹھا کرنا شروع کی تو چونکا دینے والی معلومات سامنے آئیں۔ معلوم ہوا کہ وہ میٹرو پلازہ پر انا پورنا چھولے بھٹور کے قریب ٹھیلے لگا کر  ویج بریانی فروخت کرتا تھا۔ لاک ڈاؤن کے بعد ، اس نے گوتم نگر سبزی منڈی میں واقع گلی کے باہر کھڑا ہونا شروع کیا۔ حال ہی میں ، جب پولیس سخت ہوگئی ، تب اس نے اسے ٹھیلہ لگانا بند کر دیا ۔ مجموعی طور پر اس نے لاک ڈاؤن میں ویج  بریانی بیچنا جاری رکھی۔گوتم  نگر  گلی کے باہر  جہاں پر وہ ٹھیلہ لگاتا  تھا ،ٹھیک اسی کے برابر میں کچوری اور سبزی  کا دوسرا ٹھیلہ لگاتا تھا ، کورونا پوزیٹیو شخص کا بھائی ویج بر یانی بیچتا تھا ۔

پوزیٹیو رپورٹ آنے کے بعد محکمہ صحت نے اس کے چار فیملی کو کوارنٹیں کر دیا ۔ اور کئی علاقے کو سیل کر دیا ہے ۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here