بالی ووڈ سنگر کنیکا کپور نے کورونا انفکشن کے بارے میں  سوشل میڈیا پر جانکاری دی  ہے ۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ ان کا ہوائی اڈے پر تھرمل اسکریننگ ہوا ہے ، لیکن اس وقت اس طرح کی علامات نہیں پائی گئیں تھیں ۔

لکھنؤ: ملک کورونا وائرس کی وجہ سے ایک مشکل دور سے گذر رہا ہے۔ جمعرات کی رات وزیر اعظم نریندر مودی نے اس عالمی وبا سے ہونے والے خطرے کے پیش نظر وطن سے خطاب کیا تھا ۔ انہوں نے لوگوں سے معاشرتی دوری بنانے کی  اپیل کی ہے۔ پی ایم مودی نے کہا کہ 22 مارچ کو ملک میں جنتا کرفیو نافذ ہوگا ، جو صبح 7 بجے سے شام 9 بجے تک جاری رہے گا۔ وزیر اعظم نے کہا کہ یہ وہ کرفیو ہے جو عوام خود ہی نافذ کریں  گے ۔ وزیر اعظم نے اہل وطن سے اپیل کی ہے کہ وہ زیادہ سے زیادہ گھر چھوڑنے سے گریز کریں۔لیکن ایک بالی ووڈ گلوکار کے لاپرواہ رویے نے سیکڑوں افراد کو خطرہ میں ڈال دیا ہے۔ گلوکارہ کنیکا کپور کا کورونا ٹیسٹ مثبت نکلا۔ اب یہ الزام لگایا جارہا ہے کہ اس نے ضروری ہدایات پر عمل نہیں کیا تھا ۔

لکھنؤ کے ان چار مریض جن کے رپورٹ  آج  مثبت آئی ہے (کوویڈ ۔19) ان میں بالی ووڈ کی مشہور گلوکارہ کنیکا کپور بھی شامل ہیں۔ کنیکا کپور نے کورونا انفکشن کے بارے میں  سوشل میڈیا پر جانکاری دی  ہے ۔ کنیکا نے یہ بھی کہا کہ ان کا ہوائی اڈے پر تھرمل اسکریننگ ہوئی تھی  ، لیکن ایسی علامات سامنے نہیں آئیں۔

جبکہ دوسری طرف کنیکا کپور یہ کہتی ہیں کہ ان پر فلو کی علامات چھپانے کا الزام ہے اور وہ کورونا کے لئے ضروری اسکریننگ کے عمل سے گریز کرتے ہوئے ہوائی اڈے سے باہر گئیں۔ یہ بھی کہا جارہا ہے کہ وہ لکھنؤ ہی میں 15 مارچ کو ایک پارٹی میں گئیں۔ ذرائع کے مطابق ، یہ پارٹی بی ایس پی رہنما اکبر احمد ڈمپی کی جانب سے منظم کی گئی تھی اور کنیکا اس میں شامل ہوئی تھیں ۔ اس نے ایک پارٹی اپنے گھر اور دوسری پارٹی تاج ہوٹل میں دی۔ بتایا جارہا ہے کہ اس پارٹی میں بہت سارے رہنما شریک ہوئے تھے ۔ کہا یہ بھی جا  رہا ہے کہ یوپی حکومت سے وابستہ کچھ لیڈر  بھی اس میں شامل رہے ہیں ۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here