نئی دہلی :  ملک کے کئی  بڑے شہروں میں ، پیاز کی قیمتیں چکن کے برابر ہو گئی ہے ۔ تاہم  جلد ہی اس کی قیمت 150 روپے کو پار  کر سکتی ہے ، کیونکہ تھوک کی قیمت 135 روپے تک پہنچ گئی ہے۔ ایک ہی وقت میں آن لائن گروسری فروخت کرنے والی کمپنیاں بہت سستے داموں میں پیاز فروخت کررہی ہیں۔ مارکیٹ میں مرغی کی قیمت 160 روپے کے لگ بھگ ہے۔

ان شہروں میں قیمت 130 روپیہ کلوگرام ہے

ملک کے کئی  بڑے شہروں میں پیاز کی قیمت 130 روپے فی کلو کو پار  کرچکی ہے۔ اس قیمت پر پیاز دہلی ، کولکاتہ ، چنئی ، ممبئی ، پونے اور اڑیشہ میں دستیاب ہیں۔ ملک کے دوسرے شہروں میں پیاز 90 سے 100 روپے فی کلو فروخت ہورہا ہے۔

پیاز کی قیمتوں میں اضافہ کیوں؟

اس سال مئی کے بعد  پیاز کی قیمتوں میں نمایاں اضافہ ہوا ہے۔ پچھلے سال پیاز کی پیداوار بہت کم تھی۔ اس لئے اس  میں اضافہ دیکھنے کو مل رہا  ہے۔ غیر موسمی بارش کی وجہ سے پیاز کی فصل متاثر ہوئی ہے۔ اس کے علاوہ  تاجروں نے اس کی وجہ حکومت کی منفی پالیسیوں کو بھی قرار دیا ہے۔

اس سے قبل  لاسلگاؤں کی زرعی پیداوار کی مارکیٹنگ کمیٹی (اے پی ایم سی) کے چیئرمین جےدت ہولکر نے کہا تھا کہ اکتوبر اور نومبر میں غیر موسمی بارش ہوئی ہے ، جس سے خریف میں بوئی گئی فصلوں کو نقصان پہنچا ہے۔ آندھراپردیش اور کرناٹک سمیت جنوبی ہندوستان کی ریاستوں میں بوئی گئی  پیاز کی ابتدائی اقسام کو کافی  نقصان پہونچا ہے۔ یہی وجہ ہے ، جس کی وجہ سے مارکیٹ میں نئی اقسام کی  پیاز کی کوئی فراہمی  نہیں ہے۔

پیاز کی سب سے زیادہ کاشت مہاراشٹر میں ہے۔ ہندوستان میں پیاز کی کل پیداوار میں مہاراشٹرا کا 35 فیصد حصہ ہے۔ مدھیہ پردیش ، راجستھان اور گجرات میں ستمبر کے بعد سے غیر موسمی بارش نے فصل کو نقصان پہنچا یا ہے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here