نئی دہلی : شہریت میں ترمیم کا بل لوک سبھا سے منظور ہو گیا  ہے اور آج اسے راجیہ سبھا میں پیش کیا گیا۔ مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ نے آج یہ بل پیش کیا۔ حزب اختلاف اس بل کی مسلسل مخالفت کر رہا ہے اور آئین مخالف کہہ رہا ہے۔ آسام سمیت شمال مشرق کی متعدد ریاستوں میں اس بل کے خلاف مظاہرے ہو رہے ہیں۔

شہریت میں ترمیم کا بل راجیہ سبھا سے بھی پاس ہو گیا  ہے۔ 117 ووٹ حق میں اور 92 ووٹ اس کے برخلاف تھے۔ آپ کو  بتا دیں  کہ یہ بل لوک سبھا سے پہلے ہی منظور ہوچکا ہے۔

راجیہ سبھا میں کل 245 ممبر ہیں۔ لیکن فی الحال پانچ نشستیں خالی ہیں۔ جس کی وجہ سے راجیہ سبھا میں ممبروں کی کل تعداد 240 ہے۔ لیکن صحت کی وجوہات کی بناء پر ، اس وقت 5 ممبران پارلیمنٹ کی کارروائی سے غیر حاضر ہیں۔ اس  طرح میں ایوان کے کل ممبروں کی تعداد صرف 235 رہ گئی ہے۔ لیکن ووٹنگ میں کل 230 ووٹ ڈالے گئے ، جس کی وجہ سے بل آسانی سے پاس ہوگیا۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here