نئی دہلی : شہریت قانون کے خلاف ، اردو مصنف اور پدم شری مجتبیٰ حسین نے حکومت کو اپنا ایوارڈ واپس کر نے کا اعلان کیا ہے ۔ انہوں نے اس کے پیچھے ملک کی موجودہ صورتحال کوقرار دیا۔ مجتبیٰ حسین نے شہریت کے قانون کو جمہوریت کے لئے حملہ قرار دیا۔ مجتبیٰ حسین کو سال 2007 میں پدم شری سے نوازا گیا تھا۔

مجتبیٰ حسین نے کہا کہ ہماری جمہوریت بگڑ رہی ہے۔ ابھی ملک میں کوئی نظام نہیں ہے ، صبح سات بجے کوئی حلف اٹھا رہا ہے ، رات کے اندھیرے میں حکومتیں تشکیل دی جارہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ملک میں خوف و ہراس کی فضا ہے۔

مجتبیٰ حسین  نے کہا کہ بدامنی ، خوف اور نفرت کی آگ جو ملک میں بھڑکا یا  جارہا ہے واقعی پریشان کن ہے۔ جس جمہوریت کے لئے ہم نے بہت جدوجہد کی ، ہر قسم کا  دکھ درد سہا  ، اور جس طرح  اب اسے برباد کیا جارہا ہے وہ قابل مذمت ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ سب دیکھتے ہو ئے  میں کسی بھی سرکاری ایوارڈ کو اپنے پاس  میں نہیں رکھنا چاہتا۔

شہریت ایکٹ اور این آر سی کے بارے میں ، حسین نے کہا کہ موجودہ صورتحال کو دیکھتے ہوئے وہ بہت پریشان ہیں۔ انہوں نے کہا کہ میری عمر 87 سال ہے۔ میں اس ملک کے مستقبل کے بارے میں زیادہ پریشان ہوں۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here