اترپردیش کی سابق وزیر اعلی اور بی ایس پی سپریمو مایاوتی نے شہریت ترمیمی بل پر مرکزی حکومت کو نشانہ بنایا ہے۔

لکھنؤ: اتر پردیش کی سابق وزیر اعلی اور بی ایس پی سپریمو مایاوتی نے شہریت ترمیمی بل پر مرکزی حکومت کو نشانہ بنایا ہے۔ مایاوتی نے اس بل کو غیر آئینی قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ یہ بل بابا بھیم راؤ امبیڈکر کے بنائے ہوئے آئین کے منافی ہے۔ یہ بل اسی طرح غیر مستحکم  ہے جس طرح نوٹ بندی  اور جی ایس ٹی ہے۔

مایاوتی نے مرکزی حکومت کی طرف سے ایس سی-ایس ٹی ریزرویشن میں 10 سال کی توسیع پر اطمینان کا اظہار کیا۔ انہوں نے کہا کہ مرکزی حکومت نے ریزرویشن کے لئے وقت میں توسیع کرکے اچھا کام کیا ہے۔ لیکن اب تک ایس سی-ایس ٹی لوگوں کو ان کے اصلی حقوق نہیں مل پائے ہیں۔ انہیں حقوق تب مل سکیں  گے جب نجی شعبے میں بھی ریزرویشن  دیا  جائے گا۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here