مہاراشٹر میں ، شیوسینا-این سی پی اور کانگریس کے ارکان اسمبلی نے مل کر متحد ہونے کا عزم کیا۔ اس دوران تمام اراکین اسمبلی نے اپنی پارٹی اور علاقے کے نام پر متحد ہونے کا اظہار کیا۔

ممبئی: شرد پوار نے مہاراشٹرا میں ایک ہی چھت تلے جمع شیو سینا ‘این سی پی اور کانگریس کے 162 ارکان اسمبلی سے خطاب کیا۔ اپنے خطاب کے دوران ، انہوں نے کہا کہ بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) نے مہاراشٹر میں غلط طریقے سے حکومت کی تشکیل دی۔ دیویندر فڈ نویس  کی حمایت کرنے کے اجیت پوار کے فیصلے پر ، شرد پوار نے کہا کہ ان (اجیت پوار) کا فیصلہ پارٹی کا فیصلہ نہیں ہے۔ اس دوران انہوں نے کہا کہ ہم نے گورنر کو اس سلسلے میں جانکاری  بھی دی ہے۔

شرد پوار نے ممبران اسمبلی سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ نئے ایم ایل اے کو بہکانے کی کوشش کی گئی ہے۔ این سی پی کے ممبران اسمبلی کو مکمل معلومات نہیں دی گئیں اور راج بھون میں لے جایا گیا۔ ارکان اسمبلی کو کنفیوژن کرنے کی بھی کوشش کی گئی۔

کوئی بھی ایم ایل اے اجیت پوار کے ساتھ نہیں ہوگا

میٹنگ  کے دوران ، شرد پوار نے بتایا کہ اجیت پوار کو لیجسلیچر پارٹی کے قائد کے عہدے سے ہٹا دیا گیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ کوئی بھی ایم ایل اے اجیت پوار کے ساتھ نہیں جائے گا۔ اجیت پوار کو فیصلے لینے کا حق نہیں ہے۔ آج ریاست کو تینوں پارٹیوں کی ضرورت ہے۔

بی جے پی پر حملہ کرتے ہوئے شرد پوار نے کہا کہ انہوں نے (بی جے پی) غلط طریقے سے حکومت بنانا شروع کی ہے ۔ بی جے پی نے کرناٹک میں بھی غلط طریقے سے حکومت تشکیل دی تھی ۔ ہمارے 162 ارکان اسمبلی فلور ٹیسٹ کے دوران حاضر ہوں گے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here