ماہرین موسمیات کا کہنا ہے کہ اگر یہ ایک انتہائی شدید چکرو طوفان میں بدلتا ہے تو اس کی زیادہ سے زیادہ رفتار 115 سے 125 کلومیٹر فی گھنٹہ تک پہنچ جائے گی۔

کولکتہ: خلیج بنگال سے آنے والا ایک طوفان اگلے دو دنوں میں ‘انتہائی شدید’ ہوسکتا ہے اور جان و مال کے نقصان کا سبب بن سکتا ہے۔ یہ طوفان مغربی بنگال ، بنگلہ دیش اور اڑیسہ کے ساحل سے گزرے گا۔ جمعرات کو محکمہ موسمیات نے یہ معلومات دی۔ محکمہ موسمیات کے ریجنل ڈائریکٹر جی کے داس نے کہا ، “طوفان بلبل کولکاتہ سے 930 کلومیٹر جنوب جنوب مشرق میں واقع ہے اور جمعرات کی رات کو مزید مضبوط ہونے کا امکان ہے”۔

محکمہ موسمیات کے مطابق ، یہ ہفتے کے روز مزید مضبوط ہوگا اور انتہائی سخت زمرے میں پہنچ جائے گا ، جس کی وجہ سے سمندر میں صورتحال منفی ہوسکتی ہے۔ طوفان کے پیش نظر ماہی گیروں کو مشورہ دیا گیا ہے کہ وہ جمعرات کی شام تک ساحل کی طرف لوٹ آئیں اور آئندہ  احکامات تک سمندر میں نہ جائیں۔

داس نے کہا ، “طوفان کے شمال مغرب میں مغربی بنگال اور بنگلہ دیش کے ساحل کی طرف بڑھنے کی توقع ہے۔” طوفان ‘بلبل’ کے اثر زدہ علاقے میں ہوا کی رفتار 70 سے 80 کلومیٹر فی گھنٹہ ریکارڈ کی گئی جبکہ مرکز میں  اس کی رفتار 90 کلو میٹر فی گھنٹہ ہے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here