نئی دہلی : ایودھیا کیس سے متعلق سپریم کورٹ کے فیصلے سے قبل مرکزی وزیر مختار عباس نقوی کی رہائش گاہ پر ایک اجلاس ہوا۔ اس اجلاس میں مسلم مذہبی رہنماؤں اور راشٹریہ سویم سیوک سنگھ (آر ایس ایس) کے رہنماؤں نے بھی شرکت کی۔ بی جے پی رہنما شاہنواز حسین اور فلمساز مظفر علی بھی اس میٹنگ میں موجود تھے۔

میٹینگ کا منظر۔فوتو:مرکزی وزیر نقوی کے ٹوئٹر اکاؤنٹسے لیا گیا ہے

ایودھیا میں رام جنم بھومی تنازعہ میں سپریم کورٹ کا فیصلہ اگلے سات دنوں میں آسکتا ہے۔ وجہ یہ ہے کہ سپریم کورٹ کے چیف جسٹس رنجن گوگوئی 17 نومبر کو ریٹائر ہورہے ہیں ۔ یہ واضح ہے کہ سماعت کرنے والے پانچ ججوں کی آئینی بنچ ان دنوں فیصلہ سنائے گی۔

دریں اثنا ، مرکزی حکومت نے اس فیصلے کے پیش نظر امن و امان برقرار رکھنے کے لئے سنٹرل آرمس پولیس کے چار ہزار اہلکاروں کو اترپردیش بھیج دیا ہے۔ یہ پولیس فورس ریاست میں 18 نومبر تک تعینات رہے گی۔ بتادیں کہ مرکزی وزارت داخلہ نے پیر کے روز ہی اس سلسلے میں فیصلہ لیا تھا ۔

جس میں وزارت نے پیرملٹری فورس کی پندرہ کمپنیوں کو فوری طور پر بھیجنے کی منظوری دی۔ وزارت کے حکم کے مطابق پیرا ملٹری فورس کی 15 کمپنیوں کے علاوہ بی ایس ایف ، آر اے ایف ، سی آئی ایس ایف ، آئی ٹی بی پی اور ایس ایس بی کی تین کمپنیوں کو بھیجا جانے کی منظوری دی گئی ہے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here