شاہین باغ میں مظاہرین سے گفتگو کرتے ہوئے سادھنا رام چندرن نے کہا کہ انہوں نے احتجاج کرنے والوں کو کبھی بھی  پارک میں جانے کو نہیں کہا۔

دہلی کے شاہین باغ میں شہریت ترمیمی قانون (سی اے اے) اور قومی سول رجسٹر (این آر سی) کے خلاف مظاہرین کے ساتھ بات چیت کا عمل جاری ہے۔ تاہم ، مذاکرات کے تینوں دور میں کوئی نتیجہ سامنے نہیں آیا ہے۔ تین دن کی گفتگو کے بعد  اب چوتھے دن یعنی آج بھی  بات چیت کرنے سادھنا رام چندرن شاہین باغ پہنچی ہیں اور احتجاج کرنے والی خواتین سے گفتگو کر رہی ہیں۔

اس سے قبل  جمعہ کے روز شاہین باغ میں ہونے والے مذاکرات کاروں اور مظاہرین کے مابین ہونے والی بات چیت میں سکیورٹی کا معاملہ اہم رہا ہے اور جب سیکورٹی  کے بارے میں تبادلہ خیال کیا گیا تو مظاہرین کا کہنا تھا کہ دہلی پولیس تحریری طور پر یقین دہانی کرائے۔ انہوں نے کہا کہ ہم سیکیورٹی کے بارے میں پراعتماد نہیں ہیں اور اگر کوئی حادثہ پیش آتا ہے تو کمشنر سے لے کر  کانسسٹبل تک کو ذمہ دار ٹھہرایا جائے اور برخاست کردیا جائے ۔

مظاہرین کا مطالبہ
مظاہرین تحفظ چاہتے ہیں اور وہ چاہتے ہیں کہ سپریم کورٹ اس پر حکم جاری کرے
مظاہرین چاہتے ہیں کہ شاہین باغ اور جامعہ کے لوگوں کے خلاف مقدمہ واپس لیا جائے

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here