نئی دہلی : دہلی کے ارون جیٹلی اسٹیڈیم میں ہندوستان اور بنگلہ دیش کے درمیان آج ہونے والا پہلا ٹی 20 رد ہوسکتا ہے۔ این سی آر میں  آلودگی کی سطح ‘شدید پلس’ زمرے کو عبور کر چکی ہے۔ ماحولیاتی آلودگی (روک تھام اور کنٹرول) اتھارٹی (ای پی سی اے) نے دہلی-این سی آر میں ہیلتھ ایمرجنسی تک اعلان کر چکے ہیں ۔ روشنی  انتہائی کم ہے ، ایسے میں میچ ریفری بڑا فیصلہ لے سکتے ہیں  اور میچ کو رد کرسکتے ہیں ۔ تاہم ، ڈی ڈی سی اے اور انتظامیہ پوری کوشش کر رہی ہے کہ میچ کو کروائیں۔ اسٹیڈیم کے آس پاس درختوں پر پانی کے چھڑکاؤ سے آلودگی کو کم کرنے کی کوششیں جاری ہیں۔

اس سے پہلے بھی بنگلہ دیشی کھلاڑی ’انسداد آلودگی ماسک‘ پہننے کر پریکٹس  کرتے نظر آئے ۔ بنگلہ دیش کے کوچ رسل ڈومنگو نے اس آلودہ ماحول میں ہونے والی پریکٹس  کے بارے میں کہا ، ‘یہ یقینی طور پر ہے کہ ہم اپنی آنکھوں میں کچھ پریشانی (جلن اور خارش) محسوس کررہے  ہیں ، پریکٹس  کے دوران اور اس کے بعد گلے میں خراش محسوس کر رہے  ہیں۔ لیکن … یہاں کی صورتحال ایسی نہیں ہے کہ کوئی بیمار ہو جائے یا کسی کی زندگی خطرے  میں  پڑ  جائے۔

یہ پہلا موقع نہیں جب دیوالی کے بعد کسی ٹیم کو یہاں دہلی کے زہریلے ماحول کا سامنا کرنا پڑا ہے۔ اس سے قبل دسمبر 2017 میں جب سری لنکا کی ٹیم یہاں ٹیسٹ میچ کھیل رہی تھی تو اس وقت بھی  صورتحال خطرناک تھی۔ میچ کے دوران سری لنکن ٹیم کو صحت کے مسائل کی وجہ سے دو بار کھیل روکنا پڑا۔ اس کے کھلاڑی یہاں سانس لینے میں دشواری اور بیمار ہونے کی شکایت کر رہے تھے۔ کچھ کھلاڑیوں نے گراؤنڈ پر قے کردی تھی اور کچھ ڈریسنگ روم پہنچنے کے بعد گر پڑے تھے۔

میچ سے متعلق جب سوال کیا گیا تو بی سی سی آئی کے نومنتخب صدر سوربھ گنگولی نے جمعرات کو میڈیا کو بتایا ، “ہم 23 اکتوبر کو (بورڈ پر) میں آئے ہیں  اور اب آخری لمحے اچانک تبدیل نہیں کر سکتے ہیں۔” مستقبل میں ، جب ہم میچوں کا فیصلہ کریں گے  ، تو پھر سردیوں کے دنوں میں ، شمالی ہندوستان میں میچ سے قبل ان حالات کو جانچ پرکھ کر کریں گے ۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here